ہماری لغزشیں کرتی ہیں ان کی پرورش ورنہ


27-01-2016 | ابن حسؔن بھٹکلی

ہماری لغزشیں کرتی ہیں ان کی پرورش ورنہ

یہ وقتی گردشیں ہیں یہ یونہی برپا نہیں ہوتیں

عجب سا حوصلہ ہوتا ہے ، امواجِ تلاطم میں

مسلسل سر پٹختی ہیں ۔۔۔ مگر پسپا نہیں ہوتیں




پچھلا صفحہ | اگلا صفحہ



شاعر کا مزید کلام
عید قرباں اصل میں ایثار ابراہیم ہے
کسی کا ساتھ نبھانا تھا اور کیا کرتا
ایسا لگتا ہے چمن میں پھر بہار آنے کو ہے
وقت آخر ٹہر گیا کیسے؟
سب کچھ دھواں دھواں تھا مگر دیکھتے رہے