چهو چهو کے اڑ رہی ہیں اسے شوخ تتلیاں


06-02-2019 | ابن حسؔن بھٹکلی

چهو چهو کے اڑ رہی ہیں اسے شوخ تتلیاں

چڑیاں چہک رہی ہیں اسے دیکھ دیکھ کر

 

اس کے رخ جمیل کی رعنائیاں نہ پوچھ

کلیاں چٹک رہی ہیں اسے دیکھ دیکھ کر




پچھلا صفحہ | اگلا صفحہ



شاعر کا مزید کلام
ایسا لگتا ہے چمن میں پھر بہار آنے کو ہے
مضطرب ہوں ، قرار دے اللہ
کہاں میں بندۂ عاجز کہاں حمد و ثنا تیری
کسی کا ساتھ نبھانا تھا اور کیا کرتا
خود پہ نافذ کیجئے کردار سازی کا عمل