حاکمِ رشوت ستاں فکرِ گرفتاری نہ کر


27-07-2015 | دلاور حسین فگارؔ

حاکمِ رشوت ستاں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ فکرِ گرفتاری نہ کر

کر رہائی کی کوئی آسان صورت،۔۔۔۔۔۔۔۔۔ چھوٹ جا

میں بتاؤں تجھ کو تدبیرِ رہائی،۔۔۔۔۔۔۔۔۔ مجھ سے پوچھ

لے کے رشوت پھنس گیا ہے، دے کے رشوت چھوٹ جا




پچھلا صفحہ | اگلا صفحہ



شاعر کا مزید کلام
سگنل پہ روکا ، روک کے بولا کوئی گدا
ہم بارہویں کلاس میں جب اسٹوڈنٹ تھے
شاعر میں اور شعر میں اک بحث چھڑ گئی
سکتہ تھا ایک شاعرِ اعظم کے شعر میں
جادۂ فن میں بڑے سخت مقام آتے ہیں