بچھڑا کچھ اس ادا سے کہ رت ہی بدل گئی

خالدؔ شریف
بچھڑا کچھ اس ادا سے کہ رت ہی بدل گئی
اک شخص سارے شہر کو ویران کر گیا
خالدؔ میں بات بات پہ کہتا تھا جس کو جان
وہ شخص آخرش مجھے بے جان کر گیا

پچھلا کلام | اگلا کلام

شاعر کا مزید کلام