کنٹرول کر رہی تھیں ٹریفک کا لڑکیاں


20-10-2015 | ساغرؔ خیامی

کنٹرول کر رہی تھیں۔۔ ٹریفک کا لڑکیاں

تعداد حادثات ۔۔ کی کچھ اور ۔۔ بڑھ گئی 

حالت خراب ۔۔۔ ہوگئی ہر ۔۔ راہ گیر کی

اک بس سنا ہے تیسری منزل پہ چڑھ گئی




پچھلا صفحہ | اگلا صفحہ



شاعر کا مزید کلام
رفتہ رفتہ ہر پولس والے کو شاعر کردیا
پائے کا شاعر۔۔۔ ہزار نعمت پروردگار
کنٹرول کر رہی تھیں ٹریفک کا لڑکیاں
اک شام کسی بزم میں جوتے جو کھوگئے
بولا دوکان دار کہ کیا چاہیے تمہیں؟