خود پہ نافذ کیجئے کردار سازی کا عمل


08-12-2016 | ابن حسؔن بھٹکلی

خود پہ نافذ کیجئے کردار سازی کا عمل

منکشف ہوگا یقیناً سرفرازی کا عمل

میں بھی ہو جاتا کسی دن ہر طلب سے بے نیاز

کاش کچھ آسان ہوتا بے نیازی کا عمل

بس روایت سے الگ کچھ کیجئے پھر دیکھئے

کس قدر دلچسپ ہے جدت طرازی کا عمل

کون کرتا ہے یہاں ایسے پزیرائی مری

آپ ہی کا وصف ہے ذرہ نوازی کا عمل

 

ایک عاشق ہی سمجھ سکتا ہے یہ ابن حسنؔ

عشق کیا ہے اور کیا ہے عشق بازی کا عمل




پچھلا صفحہ | اگلا صفحہ



شاعر کا مزید کلام
چهو چهو کے اڑ رہی ہیں اسے شوخ تتلیاں
کسی کا ساتھ نبھانا تھا اور کیا کرتا
سب کچھ دھواں دھواں تھا مگر دیکھتے رہے
چلنا بھی ہے چلنے کا ارادہ بھی نہیں ہے
مضطرب ہوں ، قرار دے اللہ