کون سود و زیاں کی دنیا میں


06-11-2016 | جونؔ ایلیا

کون سود و زیاں کی دنیا میں

درد غربت کا ساتھ دیتا ہے

 

جب مقابل ہوں عشق اوردولت

حسن ، دولت کا ساتھ دیتا ہے




پچھلا صفحہ | اگلا صفحہ



شاعر کا مزید کلام
ہجر کی آنکھوں سے آنکھیں تو ملاتے جائیے
جاؤ قرارِ بے دلاں شام بخیر شب بخیر
ائے کوئے یار تیرے زمانے گزر گئے
کون سود و زیاں کی دنیا میں
سرِ صحرا حباب بیچے ہیں