آدمی نے جو زندگی پائی


03-10-2016 | کوثرؔ جعفری

آدمی نے ۔۔۔ جو زندگی پائی

ہےسمندر سی اس میں گہرائی

ہر کوئی ۔۔ ڈوب کر وہاں آیا

جس کی کوشش جسے جہاں لائی




پچھلا صفحہ | اگلا صفحہ



شاعر کا مزید کلام
آئی بہار سُنبل و ریحاں نکھر گئے
دیوانہ کوئی جانبِ صحرا اگر گیا
اب جنونِ شوق میرا عشق کی منزل میں ہے
آدمی نے جو زندگی پائی