سورج ستارے چاند مرے ساتھ میں رہے


07-08-2016 | راحتؔ اندوری

سورج ، ستارے ، چاند مرے ساتھ میں رہے

جب تک تمہارے ہاتھ مرے ہاتھ میں رہے

 

شاخوں سے ٹوٹ جائیں وہ پتّے نہیں ہیں ہم

آندھی سے کوئی کہہ دے کہ اوقات میں رہے




پچھلا صفحہ | اگلا صفحہ



شاعر کا مزید کلام
جن کا مسلک ہے روشنی کا سفر
انصاف ظالموں کی حمایت میں جائے گا
اگر خلاف ہیں ہونے دو جان تھوڑی ہے
ابھی غنیمت ہے صبر میرا
سورج ستارے چاند مرے ساتھ میں رہے