ہم بارہویں کلاس میں جب اسٹوڈنٹ تھے


10-05-2016 | دلاور حسین فگارؔ

ہم بارہویں کلاس میں جب اسٹوڈنٹ تھے

گھنٹہ تھا ایک روز ۔۔۔۔ کسی لکچرار کا

 

وہ نوٹس بولتا تھا ۔۔۔۔ مگر ایک طالبہ

افسانہ لکھ رہی تھی ۔۔ دلِ بے قرار کا




پچھلا صفحہ | اگلا صفحہ



شاعر کا مزید کلام
سگنل پہ روکا ، روک کے بولا کوئی گدا
قیمت اپنی مانگتی تھی بھینس پورے بیس ہزار
ہم بارہویں کلاس میں جب اسٹوڈنٹ تھے
شاعر میں اور شعر میں اک بحث چھڑ گئی
حاکمِ رشوت ستاں فکرِ گرفتاری نہ کر