نزع میں کچھ خاطرِ بیمار کرنا چاہیئے


22-04-2016 | خواجہ عزیزالحسن مجذوبؔ

نزع میں کچھ خاطرِ بیمار کرنا چاہیئے

اب تو پورا وعدۂ دیدار کرنا چاہیئے

 

اختیار اب ۔۔ شیوۂ اغیار کرنا چاہیئے

عرض جب بیکار ہو اصرار کرنا چاہیئے




پچھلا صفحہ | اگلا صفحہ



شاعر کا مزید کلام
نزع میں کچھ خاطرِ بیمار کرنا چاہیئے
یکایک کھل گئیں آنکھیں جو بزمِ یار میں آئے
ادھر دیکھ لینا ، اُدھر دیکھ لینا
ہر تمنا دل سے رخصت ہوگئی
حقیقت میں تو میخانہ جبھی میخانہ ہوتا ہے